Saturday, November 26, 2022
HomeNational newsپی آئی اے کا خسارہ 50 ارب روپے تک پہنچ گیا

پی آئی اے کا خسارہ 50 ارب روپے تک پہنچ گیا

قومی پرچم بردار — پاکستان انٹرنیشنل ایئر لائنز (پی آئی اے)— کو 2021 میں کیلنڈر سال کے دوران 50 بلین روپے کے نقصانات کا سامنا کرنا پڑا جبکہ 2020 میں 34.6 بلین کے خسارے میں 47 فیصد اضافہ دیکھا گیا۔

٢٠٢١ میں پی آئی اے کے نقصانات 50 ارب روپے تک پہنچ گئے جب کوویڈ 19 وبائی مرض بحالی کی راہ پر گامزن تھا۔ جب کوویڈ 19 اپنے عروج پر تھا تو 2020 میں پی آئی اے کا خسارہ 34 ارب روپے تھا۔ اس بات کا گہرائی سے تجزیہ کرنے کی ضرورت ہے کہ جب بین الاقوامی سفر شروع ہو رہا ہے تو قومی پرچم بردار جہاز کے نقصانات میں تیزی سے اضافہ کیوں ہوا۔ اوپر اور ایئر لائن کے نقصانات کو کم کرنا چاہیے تھا۔ پی آئی اے کا مجموعی خسارہ بڑھ رہا ہے اور یہ 400 سے 500 ارب روپے تک پہنچ گیا ہے۔

پی آئی اے کی مالیاتی پوزیشن کے بریک اپ سے پتہ چلتا ہے کہ کیلنڈر سال 2021 کے دوران طیارے کے ایندھن کی لاگت 22.8 بلین روپے رہی اور آپریشن سے نقصان 15.027 بلین روپے ریکارڈ کیا گیا۔ پی آئی اے کو 7 ارب روپے کے زر مبادلہ کے نقصان کا سامنا کرنا پڑا، سود پر ٹیکس لگانے سے قبل 22.373 ارب روپے کا نقصان اور 27.39 ارب روپے کی مالیاتی لاگت آئی۔ ٹیکسیشن سے قبل نقصان 49.763 بلین روپے رہا اور ٹیکس کی ادائیگی سے 337.7 ملین روپے رہا۔

RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular