Sunday, December 4, 2022
HomeNational newsعمران نے پالش کرلی، اب جوتے چاٹ رہے ہیں، بلاول

عمران نے پالش کرلی، اب جوتے چاٹ رہے ہیں، بلاول

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے ہفتے کے روز کہا کہ ’سلیکٹڈ‘ وزیراعظم عمران خان دوسرے سیاستدانوں کو ’بوٹ پالش‘ کہتے ہیں، لیکن وہ خود بوٹ پالش ہیں۔

انہوں نے یہاں ایک عوامی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ”عمران خان کا پورا کیرئیر بوٹ پالش کرتا رہا ہے، لیکن اب وہ یہ کام کر چکے ہیں، اور انہوں نے بوٹ پالش شروع کر دی ہے۔ جنرل حمید گل نے ان کی نیپی بدل دی تھی۔ وہ جنرل پاشا کے لیے کھلونا تھا،‘‘ اس نے الزام لگایا۔ بلاول نے کہا کہ اب منتخب وزیراعظم ’غیر جانبدار‘ کے لیے توہین آمیز ریمارکس استعمال کرنے پر معافی مانگ رہے ہیں۔ انہوں نے ‘غیر جانبدار’ سے التجا کی کہ وہ اتحادیوں سے کہے کہ وہ پاکستان میں او آئی سی کے اجلاس سے پہلے انہیں نہ چھوڑیں، اور اب وہ انہیں راولپنڈی میں اپنے ‘جلسہ’ تک چھوڑنے کا کہہ رہے ہیں۔

انہوں نے الزام لگایا کہ وزیراعظم عمران خان اور ان کے ساتھیوں نے کرپشن کا نیا ریکارڈ قائم کیا ہے جس کی وجہ سے ملک میں مہنگائی اور بے روزگاری میں بے مثال اضافہ ہوا ہے۔

انہوں نے وزیراعظم کو خبردار کیا کہ وہ جھوٹ بولنا بند کریں۔ دوسری صورت میں ہم خاتون اول کی طرف سے کرپشن کی تفصیلات دینا شروع کر دیں گے۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ ہمیں معلوم ہے کہ عثمان بزدار نے وزیراعلیٰ پنجاب بننے کے لیے کس کو پیسے دیے۔

انہوں نے سپورٹس کمپلیکس میں اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ضم شدہ اضلاع کے لوگوں سے وعدے کیے لیکن نااہل حکمرانوں نے گزشتہ چار سالوں میں ایک بھی وعدہ وفا نہیں کیا۔

انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان اور دیگر جماعتوں کے رہنماؤں سے بعض معاملات پر ان کے اختلافات تھے لیکن کبھی ضابطہ اخلاق، جمہوری اقدار اور شائستگی کی خلاف ورزی نہیں کی۔

پی پی پی چیئرمین نے کہا کہ ’’کپتان ایک جوکر بن گیا ہے، جس نے سیاست میں بے حیائی کو متعارف کرایا، جس کے ہماری نوجوان نسل پر دور رس اثرات مرتب ہوں گے،‘‘ انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعظم اور ان کے ساتھیوں نے اب جوتے چاٹنا شروع کر دیے ہیں۔ پالش کرنا

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم خان دہشت گردوں کے دباؤ کے سامنے جھک گئے اور اب انہوں نے عسکریت پسندوں کو معاشرے کے مرکزی دھارے میں واپس لانے کے لیے ان سے مذاکرات کرنے کی تجویز پیش کی ہے۔

بلاول نے کہا، “پیپلز پارٹی کا دہشت گردوں اور عسکریت پسندوں کے بارے میں واضح موقف ہے، جنہوں نے گزشتہ برسوں میں ملک میں دہشت گردی کے خلاف جنگ کے دوران ہزاروں افراد، پولیس اور سیکیورٹی فورسز کے جوانوں کو شہید کیا،” بلاول نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہزاروں افراد کو شہید کیا۔ قومی احتساب بیورو (نیب) اپوزیشن جماعتوں کے رہنماؤں کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنانے کے لیے۔

انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے مخالفین کے خلاف نیب کے ذریعے کرپشن کے جھوٹے مقدمات اور ریفرنسز بنائے لیکن عدالتوں میں کچھ ثابت نہیں کیا۔

پی پی پی رہنما نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان سب سے بڑے چور ہیں جنہوں نے کرپشن کے خلاف صرف نعرے لگا کر خود کو چھپا لیا ہے۔

عمران کہتے ہیں مجھے اردو نہیں آتی۔ ہاں میری اردو کمزور ہے۔ میری اردو 30 سال کی عمر میں کمزور ہے، لیکن ان کی اردو 70 سال بعد بھی کمزور ہے،‘‘ بلاول نے کہا اور انہیں نصیحت کی کہ ’’پہلے اپنے تین بچوں کو اردو سکھاؤ‘‘۔

ترقی کے منصوبوں کے بارے میں بلاول نے کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو نے قبائلیوں کی فلاح و بہبود اور سابقہ ​​قبائلی علاقوں میں تعلیم اور صحت کے شعبوں کے لیے متعدد منصوبے شروع کیے تھے۔ انہوں نے کہا کہ بے نظیر بھٹو نے پاراچنار میں دو کالج قائم کیے جبکہ اقتدار میں آنے کے بعد ایک کالج قائم کیا جائے گا۔

قبل ازیں رکن قومی اسمبلی ساجد طوری، رکن صوبائی اسمبلی امین آفریدی، جلال بنگش سمیت پیپلز پارٹی کے کارکنوں کی بڑی تعداد نے پارٹی چیئرمین کا استقبال کیا۔

بلاول جمنازیم ہال بھی گئے اور انہوں نے حالیہ پشاور بم دھماکے کے شہداء کے لواحقین سے تعزیت کی۔

سوگوار خاندانوں سے اظہار ہمدردی کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی شہداء کی جماعت ہے جو لواحقین کے ضیاع کا دکھ بہتر طور پر جانتی ہے۔

RELATED ARTICLES

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here

- Advertisment -

Most Popular